ایک کتاجس کی وجہ سے چالیس ہزارلوگ مسلمان ہوگئے،اس پوسٹ میں پڑھیں

مسلمان

کائنات نیوز! ابن حجرکے مطابق جب منگولوں نے پوری مسلمان دنیاپرقبضہ کرلیااوردن بڑے دردناک دن تھےبغدادمیں ظلم ہو رہاتھااورغرناطہ لٹ رہاتھاجب جامعہ نظامیہ کی لائبریری دجلہ کی موجو ں کی زدمیں تھی جب تہہ خانوں میں پانی چھوڑ دیاگیا.اورمسلمانوں نے سوالاکھ مردے وہاں بھی اٹھائیں. وہ دن بڑے دردناک دن تھے.ایک منگول سردارعیسائی ہوگیااوراس نے بہت بڑا اجتماع کیا

ابن حجرلکھتے ہیں کہ اس بدبخت عیسائی بادشاہ نے دریدہ دہنی کرتے ہوئے حضوراکرم ؐ کی شان میں گستاخی کی تواس بڑے اجتماع کے اندرایک بھی مسلمان نہیں تھا.توجب وہ حضوراکرم ؐ کے خلاف بھونکا تو پاس بندھاہواایک کتاجوش میں آگیااوروہ زورزورسے بھونکنے لگاسب نے اسے کہاکہ تومسلمانوں کے نبیؐ کے خلاف بولاہے اس لیے یہ کتا زورزورسےبھونک رہاہے. تواس نے کہاکہ نہیں نہیں یہ ویسے ہی بڑاغیرت مندہےمیں نے ہاتھ سے اشارہ کیاتویہ سمجھاکہ مجھے مارنے لگاہےاس وجہ سے غیرت میں آیاتواس نے دوبارہ حضوراکرم ؐ کی شان میں گستاخی کرناشروع کردی اتنامجمع تھالیکن اس میں سے کوئی بھی حضوراکرم ؐ کاغلا م نہیں تھاتوتاریخ نے بتایاہے کہ وہ کتاایک دم رسہ توڑ کرجھپٹ کرشیرکی طرح اس پرحملہ آورہوگیااوراس نے اپنے دانت اس کی گردن میں گاڑھ دئیے اورچھوڑ تب جب اس کو جہنم میں پہنچادیاابن حجرلکھتے ہیں کہ اس واقعہ کودیکھ کرچالیس ہزارلوگو ں نے اسلام قبول کرلیا

مزید پڑھیں! برطانیہ میں کتے کورونا وائرس کے مریضوں کی شناخت کرنے لگے

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!