اگر پی آئی اے کا اپنا نظریہ ہی “ME Too” بن گیا ہے توپھراسے تباہی سے کون بچاسکتا ہے

لاہور(کائنات نیوز)اگر پی آئی اے کااپنا نظریہ ہی “می ٹو” بن گیا ہے توپھراسے تباہی سے کون بچاسکتا ہے، خصوصی رپورٹ نے سب کچھ کھول کر سامنے رکھ دیا ، اطلاعات کےمطابق کراچی میںPIA کی ایئربس کےحادثے کی وجوہات سامنے آنے کے بعد اب کہا جا رہا ہے کہ اگرپی آئی اے نے اپنی حالت خود ہی نہ بدلنے کا تہیہ کررکھا ہے تو

پھراسے کوئی مزید نقصان سے بچا نہیں سکتا باغی ٹی وی کے مطابق کراچی میں PIA کے طیارے کی تباہی کے ذمہ دار پائیلٹ کے حوالے سے جب سے معلومات سامنے آئی ہیں‌اس وقت سے لوگوں نے کہنا شروع کردیا ہے کہ اب وہ پی آئی اے پرسفر نہیں‌کریں‌گے ذرائع کے مطابق یہ پہلا موقع نہیں بلکہ اس سے قبل بھی کئی ایسے واقعات رو نما ہوچکے ہیں‌جو پی آئی اے کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہیں ، پی آئی اے کے عملے کا ڈسپلن کا پابندنہ ہونا ، پی آئی اے میں جس کی لاٹھی اس کی بھینس کے قانون کا بول بالا ہونا عام پایا جاتا ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ ایسے ہی کئی ایسے واقعات سامنے آچکے ہیں کہ پاکستان کے اس اہم اورحساس ادارے کے اندرتک عام بندے کو بھی خصوصی اپروچ حاصل ہے ، صرف یہ ہی نہیں بلکہ ایسے واقعات بھی سامنے آئے ہیں‌کہ جس میں غیرملکی مرد اورخاص کرلڑکیاں جس طرح پی آئی اے کے طیاروں میں اٹھکلیاں اورڈانس کرتی ہوئی نظرآتی ہیں‌تو پھر کہا جاسکتا ہے کہ پی آئی اے نے اب نظریہ اپنا لیا ہے کہ آبیل مجھے مار ایسا ہی ایک اہم واقعہ چند سال قبل واقعہ رونما ہوا جس میں ایک کینیڈین لڑکی PIA کے طیارے میں‌اس طرح گھوم رہی تھی جیسے کہ وہ کسی شومیں پرفامنس دکھا رہی ہے واقعہ کچھ یوں ہے کہ پی آئی اے کا طیارہ ایئرپورٹ پر پارک تھا، طیارے تک خاتون کی رسائی نے سیکیورٹی کا پول کھول دیا . قومی ایئرلائن (پی آئی اے) کے طیارے میں غیر ملکی خاتون کی جانب سے پاکستانی پرچم پہن کر رقص نے سیکیورٹی پر سوالیہ نشان لگا دیا تھا .ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے

یہ غیر ملکی خاتون اطمینان سے پاکستانی لباس اور قومی پرچم زیب تن کیے رقص کر رہی تھی . اس معاملے نے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کے انتظامات کی بھی قلعی کھول دی . خاتون کا قومی پرچم لے کر واہیات رقص پی آئی اے کی بدحالی کا بڑا ثبوت ہے. خاتون کی طیارے تک رسائی اور ویڈیو بنانے والے کی تحقیقات شروع کر دی گئی تھیں‌ لیکن آج تک ان تحقیقات کا پتہ نہ چل سکا . دوسری طرف شہریوں کا کہنا ہے کہ جب تک اس کلچر کو ختم نہیں کیا جاتاپی آئی اے میں حادثات کو روکنا ممکن ہے ، حکومت کو چاہیے کہ ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے اہم فیصلے کرےپی آئی اے نے خاتون کے رقص والی ویڈیو سے لاتعلقی کا اظہار کرتے وہئے اسے اپنے سوشل میڈیا پیج سے بھی ڈیلیٹ کر دیا تھا . ترجمان کے مطابق اس بات کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہے کہ یہ طیارہ کس ایئرپورٹ پر پارک تھا، اس واقعے میں کون کون ملوث ہے؟ تحقیقات کی جا رہی ہیں.لیکن آج تک پتہ نہ چل سکا کہ مجرم کون ہے ؟ دوسری جانب PIAکے طیارے میں کیکی چیلنج کرنے والی غیر ملکی خاتون ایوازوک نامی اس خاتون کہنا تھا کہ رقص میں پاکستانی پرچم کی موجودگی کے باعث لوگوں کی دل آزاری ہوئی، جس پر میں پاکستانیوں معذرت کرتی ہوں، مجھے پاکستان کے لوگوں اور کلچر سے بہت محبت ہے.

یہ بھی پڑھیں! پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سمارٹ قبر متعارف پاکستانیو ں کے ہوش اڑا دینے والی خبر آگئی

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!