حکومت نے غریب عوام پر بجلیاں گرا دی،صارفین کو بجلی پردی گئی سبسڈی نئے بجٹ میں واپس

اسلام آباد(کائنات نیوز) حکومت پاکستان نے وفاقی بجٹ 21-2020ء میں بجلی صارفین کی سبسڈی میں 111 ارب روپے کی کمی کر دی گئی ہے۔بجٹ دستاویز کے مطابق کے الیکٹرک کی سبسڈی میں 34 ارب روپے کمی کی گئی ہے ،دیگر بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے صارفین کے لیے سبسڈی میں 77 ارب روپے کی کٹوتی کی گئی ہے۔

بجٹ دستاویز میں کہا گیا ہے کہ کےالیکٹرک کے سوا دیگر بجلی صارفین کے لیے نظرِ ثانی شدہ سبسڈی 201 ارب روپے ہے۔دستاویز کے مطابق 201 ارب روپے کی سبسڈی آئندہ مالی سال کے لیے 124 ارب روپے کر دی گئی ہے، سبسڈی300 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے گھریلو اور زرعی ٹیوب ویل استعمال کرنے والے صارفین کو دی جاتی ہے۔بجٹ دستاویز میں کہا گیا کہ سبسڈی 300 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے فاٹا میں ضم علاقوں اور آزاد کشمیر کو بھی دی جاتی ہے۔بجٹ دستاویز کے مطابق کے الیکٹرک کے صارفین کے لیے سبسڈی 59 ارب روپے سے کم کر کے ساڑھے 25 ارب روپے کر دی گئی ہے۔بجٹ دستاویز میں کہا گیا کہ کے الیکٹرک کے 300 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے والے صارفین کے لیے 25 ارب روپے کی سبسڈی کو 10 ارب روپے کر دیا گیا ہے۔بجٹ دستاویز میں کہا گیا کہ کے الیکٹرک میں انڈسٹریل سپورٹ پیکیج کی سبسڈی 10 ارب روپے سے کم کر کے 5 ارب روپے کر دی گئی ہے۔بجٹ دستاویز میں کہا گیا کہ وفاقی بجٹ میں کے الیکٹرک کو سستی ایل این جی کی فراہمی پر سبسڈی بھی 14 ارب روپے کم کر دی گئی ہے۔دوسری جانب نئے مالی سال میں حکومت 13 ارب 15 کروڑ ڈالر کے قرضے حاصل کریگی،پروجیکٹ لونز کی مد میں 1 ارب 32 کروڑ ڈالر، پروگرام لونز کی مد میں 3 ارب ڈالر اور غیر ملکی مالیاتی اداروں سے 8 ارب 80 کروڑ ڈالر کے قرض لیے جائینگے۔

بجٹ دستاویزات میں کہا گیا کہ مالی سال 21-2020ء میں حکومت مختلف مد میں 13 ارب 15 کروڑ ڈالر کے غیر ملکی قرضے حاصل کریگی۔اسلامک ڈیویلپمنٹ بینک سے 1 ارب ڈالر، سعودی عرب سے 1 ارب ڈالر ادھار تیل کی مد میں، ڈیڑھ ارب ڈالر یورو بانڈز اور سکوک بانڈز جاریکرکے حاصل کیے جائینگے۔کمرشل بینکوں سے 4 ارب ڈالر جبکہ آئی ایم ایف سے 1 ارب 30 کروڑ ڈالر کا قرض لیا جائیگا۔ پروجیکٹ لونبز کی مد میں 1 ارب 32 کروڑ ڈالر اور پروگرام لونز کی مد میں 3 ارب ڈالر غیر ملکی قرض لیا جائیگا۔دستاویزات کے مطابق مجموعی طور پر حکومت 13 ارب 15 کروڑ ڈالر کے غیر ملکی قرضے نئے مالی سال میں حاصل کریگی۔

مزید پڑھیں! واپڈا کا کارنامہ ، قصاب کو بجلی کا کروڑوں کا بل بھجوا دیا

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!