اسپغول کی بھوسی کے فائدوں کے ساتھ کیانقصانات ہیں؟جانیں

اسپغول

کائنات نیوز! موجودہ دور میں جیسے جیسے طرز زندگی جسمانی آرام کی طرف راغب ہوتی جا رہی ہے اس کے ساتھ ساتھ لوگوں میں طرح طرح کی بیماریوں میں بھی اضافہ ہو رہا ہے اور ان مسائل کے خاتمے کے لیے لوگ اپنے طور پر گھریلو ٹوٹکوں اسپغول پر زیادہ سے زيادہ انحصار کرنے لگے ہیں جس کے انسانی صحت پر انتہائی خطرناک اثرات بھی مرتب ہو سکتے ہیں-

ایسی ہی کچھ اشیا میں اسپغول کی بھوسی بھی شامل ہے جس کو لوگ بلا سوچے سمجھے روزانہ استعمال کرتے ہیں اور اس کو ہر بیماری کا علاج سمجھتے ہیں- مگر اس حقیقت سے کم لوگ واقف ہیں کہ معدے کی کئی بیماریوں کے علاج کے طور پر استعمال کی جانے والی یہ بھوسی جان لیوا بھی ثابت ہو سکتی ہے- اس لیے اس کو ڈاکٹر کے مشورے کے بغیر استعمال کرنے سے احتیاط برتنی چاہیے اور اس کے علاوہ اس کا روزانہ استعمال بھی خطرناک ثابت ہو سکتا ہے- اسپغول کی بھوسی کے زیادہ استعمال کے نقصانات 1: بھوک کا ختم ہو جانا اسپغول کی بھوسی اپنے اثرات کے اعتبار سے کافی بھاری ہوتی ہے اور اس کو روزانہ کی بنیاد پر استعمال کے سبب بھوک ختم ہو جاتی ہے اور سنگین معدے کے مسائل کا سبب بن سکتی ہے- وزن کم کرنے کے لیے لوگ اس کا استعمال کرتے ہیں مگر اس سے وزن میں کمی واقع ہو بھی جائے تو انسانی صحت کو خطرات لاحق ہوسکتے ہیں- 2: وقت سے پہلے بڑھاپے کا باعث ہوتی ہے اسپغول کی بھوسی کے روزانہ کی بنیاد پر بغیر ڈاکٹر کے مشورے کے استعمال کرنے سے اس کے سبب جوڑوں اور کمر کے درد میں اضافہ ہو جاتا ہے- ہڈیاں کمزور ہو جاتی ہیں اور انسان وقت سے قبل ہی بڑھاپے کا شکار ہو جاتا ہے- 3: سانس کی نالی میں پھنس جانے کا اندیشہ اسپغول کی بھوسی کو بغیر پانی کے استعمال نہیں کرنا چاہیے کیوں کہ یہ نمی پانے کے بعد پھولنا شروع ہو جاتی ہے

اور منہ میں بغیر پانی کے استعمال کرنے سے اس کے سانس کی نالی میں پھنسنے کا خطرہ ہوتا ہے جو جان لیوا بھی ہو سکتا ہے- 4: زہریلے اثرات اس کو مختلف چیزوں کے ساتھ ملا کر حکیمی نسخوں کے مطابق دوا بنانے کا رجحان عام ہے- مگر اس کے اثرات مختلف چیزوں کے ساتھ مل کر مختلف ہو جاتے ہیں یہاں تک کہ بعض چیزوں کے ساتھ مل جانے پر یہ زہریلا اثر بھی پیدا کر سکتی ہے- اس لیے اس کو کسی اور چیز کے ساتھ مکس کر کے استعمال میں احتیاط برتنی چاہیے- اسپغول کی بھوسی کے استعمال کا درست طریقہ 1: پیچش کی صورت میں اس کا استعمال دہی کے ساتھ ملا کر کرنے کی صورت افاقہ ہوتا ہے- 2: قبض کی صورت میں رات کو سونے سے قبل نیم گرم دودھ میں مکس کر کے اس کا استعمال مفید ثابت ہوتا ہے- 3: خشک کھانسی کی صورت میں بھی اس کو نیم گرم دودھ کے ساتھ لینے سے آرام ملتا ہے- 4: جل جانے کی صورت میں اس کا پانی میں پیسٹ بنا کر زخم پر لگانے سے ٹھنڈک ملتی ہے- 5: اس کو روزانہ استعمال صحت کے لیے نقصاندہ ہو سکتا ہے اس لیے اس کو ہفتے میں ایک یا دو بار سے زيادہ استعمال نہیں کرنا چاہیے

کھمبیوں کے بارے میں ایک ایسی کتاب جسےپکاکرکھایا بھی جاسکتاہے

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!