جب موت کا وقت قریب آتا ہے توہاتھ کا انگوٹھا ، انتہائی اہم معلومات

انگوٹھا

کائنات نیوز! ویسے تو ان باتوں پر یقین نہیں کر نا چاہیے لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ انسانی انگوٹھا حیران کن حد تک پامسٹری کے مشاہدات کا محور رہا ہے۔اسکی طوالت اور استقامت بیان کرتی ہے کہ ایسا انسان کن خصوصیات کا حامل ہے اور اسکے اندر کمزوری کیسے پیدا ہورہی ،حتٰی کہ موت کاآلارم بھی بجا دیتا ہے۔

انگوٹھے پر اساتذہ کا کہنا ہے کہ انہوں نے کیروسے انگوٹھے کی تشخیص کا سبق سیکھا ہے ۔کیونکہ انگوٹھے کا تعلق انسان کے دماغ سے جڑا ہے۔انسان کیا سوچتا ہے،اسکی فطرت کیسی ہے اسکا ویسے تو علم نہیں ہوتا لیکن انگوٹھے کو پڑھنے والے کافی حد تک کسی بھی انسان کا دماغ سکین کرلیتے ہیں۔انگوٹھے کے سائز کو دیکھ کر کیرو نے بتایا تھا کہ انسان کا قد چھوٹا بھی ہو لیکن اسکے ہاتھ کی ساخت انتہائی متوازن بھی ہوسکتی ہے۔انگوٹھے کے سائز کا کسی انسان کے قدوقامت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ دماغی طور پر جو افراد کمزور ہوتے ہیں ان کے انگوٹھے کمزورہوتے ہیں ۔ کبھی دو افراد کو باتیں کرتے وقت دیکھئے۔ اگر ان میں کوئی اپنا انگوٹھا چھپانے کی کوشش کر رہا ہو تو سمجھئے انگوٹھا چھوٹا ہو گا یا پتلا ہو گا۔ غیر ترقی یافتہ ہو گا۔ اسی طرح وہ فرد بھی دماغی طور پر کمزور ہو گا۔ اس میں خود اعتمادی کا فقدان ہو گا۔ اپنے پوری طرح اعتماد نہ کر سکے گا۔ایک اور دلچسپ بات پیش کروں۔ جب کوئی فرد ہاتھ دیکھ رہا ہو تو اس کا انگوٹھا دیکھنا دلچسپ ہوتا ہے۔ ایسا وقت بھی آتا ہے جب ہاتھ پر انگوٹھا اپنی قوت کھو بیٹھتا اور ہتھیلی پر گرجاتا ہے ۔یہ کس چیز کی علامت ہیں ،اسے لازمی مدنظر رکھیں۔کیونکہ یہ انگوتھا تب ہتھیلی پر گرتا ہے جب

پیر دلہن بن کر کیوں بیٹھا ہے ؟ ایسی وجہ بتادی کہ آگ لگ گئی، ہر مسلمان آگ بگولہ ہوگیا کیونکہ

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!