معاونین خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا اور تانیہ ایدر یس نے کس کے کہنے پراستعفیٰ دیا؟ جانیں

اسلام آباد(کائنات نیوز) وفاقی وزیرقانون ڈاکٹر فروغ نسیم نے کہا ہے کہ معاونین خصوصی اپنی مرضی سے آئےاور اپنی مرضی سے ہی استعفیٰ دیا،میرا تعلق ایم کیو ایم پاکستان سے پہلے بھی تھا اب بھی ہے،مشاہداللہ خان کودھمکی دینےکاسوال ہی پیدانہیں ہوتا۔تفصیلات کے مطابق سینیٹ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے

وفاقی وزیر قانون بیرسٹر ڈاکٹر فروغ نسیم نےکہا کہ میرے رول ماڈل حضورﷺ ہیں،میرا تعلق ایم کیو ایم پاکستان سے پہلےبھی تھااب بھی ہے،ایم کیو ایم پاکستان بانی سےاپنے راستے جدا کرچکی ہے،آپ نے یہ بھی کہا میں نے الطاف حسین کو نیلسن مینڈیلا قراردیا،واضح کہہ رہا ہوں کہ ایم کیوایم پاکستان کابانی سے اب کوئی تعلق نہیں،خالد مقبول صدیقی کہتے ہیں فروغ نسیم ہماری پارٹی سے ہیں،ایم کیوایم کےکوٹہ پر2وزارتیں تھیں،وزارت قانون ایم کیوایم کی خواہش نہیں تاہم ایم کیو ایم کی خواہش 2 وزارتوں کی تھی،عزیز منشی تو نوازشریف کے اٹارنی جنرل تھے۔انہوں نےکہا کہ مشاہد اللہ خان کے تمام اختلافات سر آنکھوں پر،مشاہداللہ صاحب کی بڑی عزت کرتاہوں اورکرتارہوں گا،مشاہداللہ خان کےتمام ذاتی حملوں کوسرآنکھوں پرلیتا ہوں، مشاہداللہ خان کودھمکی دینےکاسوال ہی پیدانہیں ہوتا۔انہوں نے کہا کہ امریکا آئی سی جے کا فیصلہ نہیں مانتا تو ہم امریکا نہیں ہیں، کسی حکومت نے نہیں کہا ہمیں آئی سی جے سے نکلنا چاہیے۔ڈاکٹر فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ معاونین خصوصی اپنی مرضی سے آئے اور اپنی مرضی سے ہی استعفیٰ دیا۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے معاونین خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا اور تانیہ ایدروس کے مستعفی ہونے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ معاونین بطور ٹیکنوکریٹ آئےکام نہیں چل رہا تھا

اس لیے مستعفی ہوئے۔اے آر وائی نیوز کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں گفتگو کرتے ہوئے فوادچوہدری نے کہا کہ میرا خیال ہےظفرمرزا جس طرح پالیسی چلانا چاہتے تھے ویسے نہیں چلی کچھ لوگ ایسے بھی ہوتے ہیں جو دباؤ نہیں لےسکتےمستعفی ہوجاتےہیں، سیاست دباؤ والا کام ہے پاکستان کےسسٹم میں زیادہ دباؤپڑتاہے۔فوادچوہدری نے کہا کہ کابینہ میں رد و بدل وزیراعظم عمران خان کا اختیار ہے ٹیم کا انتخاب اور کام کیسےچلانا ہےوزیراعظم کا اختیارہوتا ہے، پی ٹی آئی میں زیادہ رواج ہےبات کرسکتےہیں سنی بھی جاتی ہے، ہماری کابینہ میں ایسی بحث ہوتی ہےجوماضی میں نہیں ہوتی تھی پارٹی میں ہرشخص کواپنی بات کرنےکاپورحق دیاجاتاہے پارٹی میں کوئی بھی کسی سے بھی سوال کرتا ہےجواب دیا جاتا ہے۔

عید سے قبل انتہائی افسوسناک خبر ، 32پاکستانی جاں بحق

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!