چلغوزے کے دھندے سےپاکستان کو کتنا نقصان پہنچایا گیا؟ جانیں

چلغوزے

لاہور (کائنات نیوز) ایف بی آر کے مطابق حسنین ایکسپورٹس نے جرمنی میں پانچ کروڑ ڈالر کے چلغوزے برآمد کیے لیکن صرف ساڑھے چار لاکھ ڈالر کی ادائیگی ظاہر کی گئی۔ذرائع کے مطابق سٹیٹ بینک اور دیگر بنکوں کے ریکارڈ سے باقی ماندہ رقوم کی آمد ظاہر نہیں ہوئی۔ برآمدی سامان کی بڑی رقم خفیہ بیرونی اکاؤنٹس میں ٹرانسفر کی گئی۔فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے کمپنی کے مالک سے رابطہ کیا

تو بے نامی اکاؤنٹ سامنے آیا۔ کمپنی کی جانب سے ظاہر کئے گئے سول پروپرائیٹر سلطان محمود نے کاروبار سے لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔دنیا نیوز ذرائع کے مطابق بے نامی اکاؤنٹ کا مالک سلطان محمود کاروبار کرنے والوں کے ادارے میں 20 سال ملازمت کرتا رہا لیکن ابھی تک دو مرلے کے گھر میں رہائش پذیر ہے۔بے نامی زون ٹو ایف بی آر نے ایڈجوڈیکیشن اتھارٹی کو چھ اگست کو ریفرنس بھیج دیا ہے اور ابتدائی کارروائی کرتے ہوئے اصل مالکان کی قصور اور سندر میں زمین قبضے میں لے لی ہے۔

میں نے ترکی کایہ ڈرامہ دیکھ لیاہے اب مجھے مشورہ دیں کہ میں اگلاکونساترک ڈرامہ دیکھوں۔ جانیں اس خبر میں

اپنی رائے کا اظہار کریں