سرکاری ٹی وی کے مارننگ شو میں خاتون کی ورزش کا معاملہ علی محمد خان بھی انصار عباسی کے حق میں بول پڑے،

کائنٹ نیوز! وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے کہا ہے کہ پی ٹی وی کو ہماری اسلامی اور مشرقی ثقافتی اقدار پر عمل کرنا چاہیے۔خیال رہے کہ 2 روز قبل معروف صحافی انصار عباسی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) کے مارننگ شو کی ویڈیو شیئر کی تھی۔شیئر کی گئی ویڈیو میں ایک خاتون ورزش کررہی تھی

اور انہیں ایک مرد کی جانب سے ہدایات بھی دی جارہی تھیں۔انصار عباسی نے ویڈیو شیئر کرنے کے ساتھ ساتھ ٹوئٹ میں وزیراعظم عمران، وزیراطلاعات شبلی فراز اور معاون خصوصی برائے اطلاعات عاصم سلیم باجوہ کو مینشن کیا اور لکھا کہ یہ پی ٹی وی ہے تاہم مذکورہ ٹوئٹ پر انصار عباسی کو سوشل میڈیا پر عوام کی بڑی تعداد کی جانب سے شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا اور کچھ لوگوں نے ان کی حمایت بھی کی تھی اب وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے انصار عباسی کی جانب سے ٹوئٹ کی گئی ویڈیو سے متعلق بیان جاری کیا ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ٹوئٹ میں علی محمد خان نے صحافی انصار عباسی کی جانب سے شیئر کی گئی ویڈیو کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اسلام ایسی چیزوں کی اجازت نہیں دیتا۔انہوں نے کہا کہ قومی نیٹ ورک ہونے کے ناطے پی ٹی وی کو ہماری اسلامی اور مشرقی ثقافتی اقدار پر عمل کرنا چاہیے۔علی محمد خان نے لکھا کہ کسی جگہ یہ حد بندی ضروری ہے کہ ہم کس حد تک لبرل اور مغربی بن سکتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ مدینہ کی ریاست کے تصور کو اس کی روح کے ساتھ اپنایا جانا چاہیے۔

والیم 10نوازشریف کی ملک دشمن سرگرمیوں کے ریکارڈ سے بھرا ہوا ہے، والیم 10 کب کھولا جائے گا؟ تہلکہ خیز دعویٰ۔جانیں

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!