جڑانوالہ روڈ پر 6افراد کی لڑکی کیساتھ اجتماعی عصمت دری،لڑکی کون نکلی ؟

لاہور(کانئات نیوز  ) جڑانوالہ روڈ پر 6افراد کی لڑکی سے اجتماعی عصمت دری ، وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے واقعہ کا نوٹس لے لیا، وزیراعلی پنجاب نے ملزمان کی فوری گرفتاری کا حکم دیتے آر پی او سے واقعے کی رپورٹ طلب کر لی، انہوں نے کہا کہ ملزمان کو قانون کی گرفت میں لا کر انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں۔

لاہور کے علاقے جڑانوالہ روڈ پر تھانہ مانگٹا نوالا کے قریب لڑکی سے اجتماعی بد سلوکی کی گئی۔ مذکورہ مقام پر بس خراب ہونے پر سڑک پر کھڑی خاتون سے 6 کار سوار افراد نے اجتماعی بد سلوکی کی۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ کار سوار افراد نے خاتون کو لفٹ دینے کے بہانے اپنے ساتھ بٹھا لیا۔ملزمان نے خاتون زبردستی نشہ پلا کر زیادتی کا نشانہ بنایا۔ملزمان نے خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد برہنہ حالت میں چھوڑ دیا،پولیس نے واقعے کا مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کر لیا ہے تاہم کوئی گرفتاری بھی عمل میں نہ لائی جا سکی،یہ واقعہ 24 ستمبر کو پیش آیا تھا جب کہ پولیس نے مقدمہ پانچ دن بعد درج کیا۔ اس واقعے نے لوگوں کے رونگٹے کھڑے کر دئیے ہیں جب کہ خواتین میں شدید خوف و ہراس پایا جا رہا ہے۔دوسری جانب تھرپارکر کے علاقے میں اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی 17 سالہ لڑکی نے ملزمان کی جانب سے کیس واپس لینے کے دباؤ میں آکر خودکشی کرلی۔

گاڑی والوں کیلئے خوشخبری، پٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں بڑی کمی ،

اپنی رائے کا اظہار کریں