مولانا صاحب! کیا آپ کو مریم نواز بطور وزیر اعظم پاکستان قبول ہیں ؟اس کے حوالے سے مولانا فضل الرحمان کا دلچسپ جواب

کائنات نیوز! مریم نواز کو بطور وزیراعظم قبول کرنے کے حوالے سے مولانا فضل الرحمان کا دلچسپ جواب، جاتی امراء رائیونڈ میں ہوئی ملاقات کے بعد صحافی کی جانب سے پوچھے گئے سوال کے بعد جے یو آئی ف کے سربراہ نے سوال کو پلانٹڈ قرار دے دیا۔ تفصیلات کے مطابق جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمانکی جانب سے مسلم لیگ ن کی صدر مریم نواز سے جاتی امراء لاہور میں خصوصی ملاقات کی گئی۔ ملاقات کے بعد

دونوں رہنماوں کی جانب سے پریس کانفرنس بھی کی گئی۔ پریس کانفرنس کے دوران ایک صحافی کی جانب سے مولانا فضل الرحمان سے سوال کیا گیا کہ آپ ماضی میں عورت کی حکمرانی کو ناجائز قرار دیتے رہے ہیں، تو اب اگر مریم نواز وزیراعظم بننے میں کامیاب ہوتی ہیں، تو ایسے میں کیا انہیں ملک کی حکمراں تسلیم کریں گے؟ اس سوال کا جواب دینے کی بجائے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آپ کو یہ سوال پیچھے سے فیڈ کیا گیا ہے۔ اس موقع پر مریم نواز نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ آئین کےدفاع کی موومنٹ ہے، پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ ایک بڑی تحریک ہے۔ پی ڈی ایم ووٹ کی عزت اورووٹ کی حرمت کےدفاع کی موومنٹ ہے۔ پاکستان میں میڈیا،عدلیہ اوراداروں پردباوکامقدمہ پی ڈی ایم لڑےگی۔ مریم نواز کا کہنا ہے کہ کہا جاتا ہے کہ بھارت نواز شریف کی باتوں سے خوش ہوتا ہے، لیکن پاکستان کی معیشت کادیوالیہ نکلتاہےبھارت تب خوش ہوتاہے۔ بھارت اس دن خوش ہوتا ہے جب سقوط کشمیرہوتاہے، پاکستان کی معیشت کا دیوالیہ نکلتا ہے۔ مریم نواز کا مزید کہنا ہے کہ نوازشریف کو محب وطن ثابت کرنے کیلئےکسی سرٹیفکیٹ کی ضرورت نہیں۔ حکومت بےساکھیوں پرکھڑی ہےاپنےوزن سےخودگرےگی۔ابھی جلسےشروع بھی نہیں ہوئےگوجرانوالہ کی پوری انتظامیہ کوتبدیل کردیاگیا۔ خوشی ہےکہ گوجرانوالہ کےجلسےمیں مولانافضل الرحمان تشریف لائیں گے، بلاول بھٹوکوگوجرانوالہ جلسےمیں شرکت کی دعوت دوں گی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں