کیا موبائل فون کا استعمال واقعی دماغ پر اثر انداز ہوتاہے؟ حیرت انگیزانکشافات

کائنات نیوز! موبائل فون کی وجہ سے ہماری یادداشت بری طرح سے متاثرہورہی ہے اور اس کی وجہ سے ہماری ذہنی استطاعت میں کمی واقع ہورہی ہے۔یہ انکشاف حال ہی میں کی گئی تحقیق میں کیا گیا ہے۔ ایک بین الاقوامی تحقیق کروائی گئی جس میں چھ ممالک کے 6000یورپی باشندوں جن کی عمر 16سال سے زائد تھی سے ان کے گھرکے فون نمبرز پوچھے اورحیران کن طور پر 47فیصد لوگوں کو یہ نمبر یاد ہی نہ تھے جبکہ

49فیصد کو اپنے جیون ساتھی ،71فیصد کو اپنے دفتر کے اور 71فیصد کو اپنے بچوں کے نمبر ہی زبانی معلوم نہ تھے۔اسیطرح ان لوگوں سے کچھ سوال کئے گئے تو ان لوگوں نے اپنے علم کے مطابق جواب دینے کی بجائے36فیصد افراد نے انٹرنیٹ کی مدد لینے کی کوشش کی۔دلچسپ بات یہ ہے کہ انٹرنیٹ پر جواب دیکھنے کے بعد 24فیصد لوگوں نے یہ قبول کیا کہ اب بھی انہیں یہ جواب یاد نہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کی وجہ یہ ہے لوگ موبائل نمبر یا دیگر چیزیں یاد رکھنے کی بجائے موبائل فونز پر بھروسہ کرتے ہیں جس کی وجہ سے ان کی یاداشت زیاد اچھی نہیں ہو پاتی اور یہ محتاجی ان کی یادداشت پر بری طرح سے اثر انداز ہوتی ہے۔ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ ہمارا دماغ اس طریقے سے کام کرتا ہے کہ اگر اس پر بوجھ ڈالا جائے تو یہ چیزیں یاد رکھتا ہے لیکن اگر انسان کے ذہن میں کسی چیز کا سہارا موجود ہو تو وہ دماغ پر زور نہیں دیتا اور یوںہماری یادداشت کمزوری کا شکار رہتی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں