آجکل نوجوان دل کے امراض میں تیزی سے مبتلا کیوں ہورہے ہیں؟ دوران تحقیق ہوشربا انکشافات

کائنات نیوز! ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ روزانہ دو انرجی ڈرنکس تندرست نوجوانوں میں بھی دل کے امراض کی وجہ بن سکتی ہے۔جنوبی آسٹریلیا کے اسپتالوں کی ایمرجنسی میں لائے جانے والے 13 سے 40 سال کے افراد کو دل کی بے قابو دھڑکن، سینے میں درد اور گھبراہٹ کی وجہ سے لایا گیا تھا اور ان سب نے روزانہ کئی مرتبہ انرجی ڈرنکس پینے کا اعتراف کیا تھا۔

یونیورسٹی آف ایڈیلیڈ سے وابستہ اور اس مطالعے پرکام کرنے والے ماہرین نے کہا ہے کہ انرجی ڈرنکس اور امراضِ قلب کا براہِ راست تعلق ہے۔اس سے متعلق سروے کیے گئےمریضوں میں 36 فیصد نے اسپتال آنے سے 24 گھنٹے پہلے ایک انرجی ڈرنک جب کہ 70 فیصد نے زندگی میں کبھی نہ کبھی انرجی ڈرنکس پی تھیں۔ ماہرین کے مطابق ان میں 8 مریضوں نے بے تحاشہ انرجی ڈرنکس استعمال کی تھیں جو روزانہ 5 ڈرنکس سے بھی زیادہ ہے جب کہ ایک مریض روزانہ 12 انرجی ڈرنکس پیتا تھا۔ ماہرین کے مطابق جن لوگوں نے زیادہ انرجی ڈرنکس پی تھیں ان کے دل اتنے ہی متاثر تھے۔پوری دنیا میں انرجی ڈرنکس بڑی مقدار میں پی جارہی ہیں اور خصوصاً نوجوانوں میں یہ مقبول ہیں اور ان کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ توانائی اور چستی پیدا کرتی ہیں لیکن اب ماہرین کا اتفاق ہوچکا ہے کہ انرجی ڈرنکس صحت کے لیے شدید خطرناک ہیں اور امراضِ قلب اورذیابیطس کی وجہ بن رہی ہیں۔ انرجی ڈرنکس میں کیفین کے علاوہ دیگر بہت سے اجزا ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ بڑی مقدار میں شکر اور قدرتی جڑی بوٹیوں کے اجزا بھی شامل کیے جاتے ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں