اس مہینے میں بارشیں اور برفباری اور ژالہ باری ،محکمہ موسمیات نے خطرناک پیشگوئی کردی

کانئات نیوز !  اسلام آباد گلگت بلتستان، خیبر پختونخواہ اور آزاد کشمیر کے پہاڑوں پر معمول سے قبل برفباری کا امکان۔ بارشیں معمول کے مطابق یا معمول سے کم ہونے کی توقع۔ درجہ حرارت معمول سے انتہائی کم جبکہ مغربی حصّوں میں ژالہ باری اور ہوائیں چلنے کی توقع!جدید ترین موسمیاتی ماڈل کی مدد سے نومبر 2020 کی ماہانہ پیشگوئی تیّار کی ہے

اس ماہ مغربی ہواؤں کے معتدل سے کمزور شدّت کے 5 سے 8 سلسلے متوقع ہیں۔ مہینے کے پہلے 3 ہفتوں میں مغربی ہواؤں کے سلسلے زیادہ تر خشک ہونگے۔ تاہم آخری دس دنوں میں نمی والی ہوائیں چلینگی، جس کے سبب زیادہ تر ملک کے شمالی اور مغربی حصّوں تک محدود #گرج #چمک کیساتھ بارش/ژالہ باری اور گرد آلود آندھیاں چلنے کا امکان ہے۔ مغربی ہواؤں کے ایک سے دو سلسلے #بلوچستان کے جنوبی حصّوں، مشرقی اور جنوبی #پنجاب جبکہ سندھ کے جنوبی اور جنوب مشرقی حصّوں میں کہیں کہیںگرج چمک کے طوفان اور گرد آلود ہواؤں کا سبب بن سکتے ہیں۔⦿ مغربی خیبر پختونخواہ، سابقہ فاٹا، گلگت بلتستان کے کچھ مغربی حصّوں اور #کوئٹہ سمیت بلوچستان کے کچھ مغربی پہاڑی سلسلوں پر بارشیں معمول کے مطابق یا معمول سے تھوڑا کم ہونے کا امکان ہے۔ اسکے علاوہ ملک کے زیادہ تر علاقوں میں بارشیں معمول سے کم ہونے کی توقع ہے۔ ⦿ پچھلے سال کی طرح اس سال بھی نومبر میں #سندھ کے کچھ جنوبی اور وسطی علاقوں میں غیر معمولی بارشیں ہو سکتی ہیں۔ مجموعی طور پر بارش کی شدّت ہلکی سے معتدل اور ساتھ ژالہ باری ہو سکتی ہے۔ ⦿ خیبر پختونخواہاور گلگت بلتستان میں 6000 سے 7000 فٹ بلندی تک برفباری ہو سکتی ہے، جس کے سبب بڑے پیمانے پر موسم کی پہلی برفباری ہو جاۓ گی، باالخصوص مہینے کے آخری دس دنوں میں۔ سوات، #کاغان اور نیلم کی وادیوں، ہزارہ، مالاکنڈ، مری اور #گلیات کے علاقوں میں اس ماہ کے اختتام تک برفباری کا سلسلہ شروع ہو جانے کی توقع ہے۔⦿ خیبر پختونخواہ، پنجاب اور سندھ کے میدانی علاقوں میں موسم نسبتاً گرم ہوگا

اور دھوپ رہیگی۔ دن کے وقت درجہ حرارت معمول سے تھوڑا کم یا کم رہیں گے جبکہ کم سے کم درجہ حرارت، جو ابھی سے ہی معمول سے انتہائی کم یا ریکارڈ توڑ حد تک کم چل رہے ہیں />، ان میں مزید کمی متوقع ہے۔ اسکی وجہ سے اوسطاً درجہ حرارت معمول سے 2 سے 4 ڈگری سینٹی گریڈ کم رہنے کا امکان ہے۔خطّہٰ #پوٹھوہار کے ضلع #چکوال میں موسم کا پہلا کُہرا رواں ہفتے میں پڑ سکتا ہے، جہاں آج صبح بھی کم سے کم درجہ حرارت محض 2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا، جو کے یکم نومبر کو ریکارڈ کیا جانے والا تاریخی ٹھنڈا ترین درجہ حرارت ہے۔⦿ بلوچستان سمیت ملک کے 5000 فٹ سے بلند پہاڑی مقامات اور گلگت بلتستان میں درجہ حرارت معمول سے 3 سے 6 ڈگری سینٹی گریڈ کم رہنے کا امکان ہے، جبکہ خیبر پختونخواہ اور کشمیر میں 5000 فٹ سے بلندپہاڑی مقامات پر اوسطاً درجہ حرارت معمول سے 2 سے 5 ڈگری سینٹی گریڈ کم رہنے کا امکان ہے

اپنی رائے کا اظہار کریں