بلاول، مریم کا دھاندلی کا الزام، احتجاج کا اعلان

کانئات نیوز !  گلگت بلتستان میں ہونے والے انتخابات کے غیرحتمی غیرسرکاری نتائج سامنے آ گئے ہیں جن کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے 10 نشستوں پر فتح حاصل کر کے واضح اکثریت حاصل کر لی ہے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی قائد مریم نواز اور پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے انتخابات میں دھاندلی کے الزامات عائد کر دیے ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے اپنے ٹویٹ میں کہا ہے کہ میرے انتخابات چرا لیے گئے ہیں،

تھوڑی دیر میں گلگت بلتستان میں ہونے والے احتجاج میں شرکت کروں گا۔مریم نواز نے اپنے ٹویٹ میں کہا ہے کہ پوری ریاستی طاقت، حکومتی اداروں، سرکاری مشینری کا زور زبردستی اور جبر کے ہتھکنڈوں سے وفاداریاں تبدیل کرانے اور بدترین دھاندلی کے باوجود سادہ اکثریت بھی حاصل نہ کرنا شرمناک شکست ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہارنے والوں کو “لوٹا پارٹی” سے دگنی سیٹوں کا ملنا کٹھ پتلی پر عوام کا عدم اعتماد ہے۔ مریم نواز نےایک اور ٹویٹ میں کہا ہے کہ پنجاب اور وفاق کی طرح سادہ اکثریت نہ ملنے کے باوجود تمھیں بیساکھیاں فراہم کر کے حکومت تو بنوا دی جائے گی لیکن اس آئینے میں اپنا چہرہ ضرور دیکھو جو گلگت بلتستان کے عوام نے تمہیں دکھایا ہے۔ انہوں نے ٹویٹس کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے مزید لکھا کہ گلگت بلتستان کے بہادر لوگو ! اس دھاندلی سے ہمت نہیں ہارنا۔ ریت کی یہ دیوار گرنے والی ہے۔ کٹھ پتلی کا کھیل ختم ہونے کو ہے۔ انشاء اللّہ ! یاد رہے کہ غیرسرکاری غیرحتمی نتائج کے مطابق کل 23 نشستوں میں سے پاکستان تحریک انصاف نے 10 پر کامیابی حاصل کر لی ہے۔ آزاد امیدواروں نے 7 سیٹوں پر فتح حاصل کی ہے جبکہ پیپلزپارٹی 3 نشسشتیں جیت پائی ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے حصے میں 2 نشستیں آئی ہیں جبکہ ایک پر ایم ڈبلیو ایم کا امیدوار کامیاب ہوا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں