پاکستان بھر میں شدید سردی ،دھند،برفباری،نظام زندگی مفلوج،کہاں کہاں برفباری ہورہی ہے،جانیں

کائنات نیوز! ملک بھر میں شدید سردی کی لہر نےانت مچا دی،پنجاب میں دھندسے ٹریفک ،ٹرینیں اورپروازیں تاخیر کا شکار ہوگئیں،شمالی علاقہ جات میں برفباری سے سڑکیں بندہوگئیں جبکہ کراچی میں سرد ہوائوں نے ڈیرے ڈال لیے۔تفصیلات کے مطابق پنجاب کے مختلف علاقوں میں شدید دھند کے باعث معاملات زندگی شدید متاثر ہو گئےجبکہ دھند کے باعث علامہ اقبال

انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے رن وے پہ حد نگاہ 300 میٹررہ گئی ہے جس کی وجہ سے متعدد پروازیں متاثر ہوئی ہیں۔ دھند کی شدت میں اضافے کے بعد علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ پہ قطر ایئرویز کی دوحہ جانے والی پرواز صبح چار بجے تک تاخیر کا شکارہوگئی ہے۔پی آئی اے کی دبئی سے آنے والی پرواز 204 رات دو بجے تک تاخیر کا شکار ہے۔کویت سے لاہور آنے والی پرواز 203 منسوخ ہو گئی ہے جب کہ کراچی سے لاہورآنے والی پرواز 306 بھی منسوخ کردی گئی ہے۔ نجی ایئرلائن کی شارجہ جانے والی پرواز412 منسوخ ہو گئی ہے اوراسی طرح پی آئی اے کی لاہور سے کراچی جانے والی پرواز 307 بھی منسوخ کردی گئی ہے۔متعلقہ حکام نے تمام مسافروں کو مشورہ دیا ہے کہ ایئرپورٹ آنے سے قبل فلائٹ انکوائری سے لازمی رابطہ کرلیں۔دوسری جانب شہر قائد میں سردی کا راج جاری ہے سائبیرین ہواؤں کی وجہ سے آج شہر میں سردی کے شدت میں مزید اضافہ ہوگیا، شہر کا کم سے کم درجہ حرارت 8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ موجودہ سردی کی لہر مزید کچھ روز تک برقرار رہے گی جبکہ آئندہ چوبیس گھنٹوں میں درجہ حرارت سات ڈگری تک گرنے کا امکان ہے۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آج کم سے کم درجہ حرارت 8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ موجودہ درجہ حرارت 10 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے

۔محکمہ موسمیات کے مطابق آج شہر کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 23 ڈگری سینٹی گریڈ تک جائے گا۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ ہواؤں کی رفتار چھ سے آٹھ کلومیٹر فی گھنٹہ ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ ہوا میں نمی کا تناسب 53 فیصد ریکارڈ ہوا ہے۔ادھر شمالی علاقہ جات کو برف باری نے اپنی لپیٹ میں لے لیا، برف سے بند سڑکوں کو پانچ روز بعد بھی کلیئر نہ کیا جاسکا۔ ملک بھر میں سردی کی شدید لہر جاری ہے، موسم کی شدت میں اضافے نے شہر قائد کے معتدل موسم کو بھی شرما دیا ہے۔سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ملک کے شمالی علاقہ جات برف باری کی لپیٹ میں ہیں، جس کے باعث نتھیا گلی، بکوٹ روڈ، خانسپور روڈ بند ہونے کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ برف باری سے بند سڑکوں کو پانچ روز بعد بھی کلیئر نہیں کیا جاسکا ہے اور گلیات ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا عملہ اور مشینری بھی روڈ سے غائب ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!