حضوراکرمﷺنے فرمایا:جوشخص3بار یہ دعا پڑھےگا اللہ پاک اُس کی یہ 4 بیماریاں دور کردےگا

حضوراکرمﷺن

کائنات نیوز! جو ایمان والا تین مرتبہ فجر کی نماز کے بعد یہ تسبیح پڑھے گا انہیں ان چار بیماریوں سے نجات مل جائیگی .چا ر بیماریوں میں پہلی بیماری پاگل پن ہے ،یہ تسبیح پڑھنے سے کسی بھی شخص کو ذہنی بیماری نہیں ہوگی.اللہ تعالی تمہیں پاگل نہیں بنائے گا. بزرگوں کے مطابق جن لوگوں کو مرگی یا بھولنے کی بیماری ہے وہ بھی شفایا ب ہوجائیگا.دوسریبیماری کوڑھ پن کی ہے .یہ تسبیح پڑھنے سے جلد سے متعلقہ کوئی بیماری نہیں ہوگی .

کچھ لوگوں کو چہرے پر دانے ،پھنسی وغیرہ نکل آتے ہیں یا ان کا رنگ کالا ہوجاتا ہے یہ تسبیح ضرور پڑھیں .تیسری بیماری اندھے پن کی بیماری ہے ،اگر آپ کو کم نظر آتا ہے .تو یہ تسبیح ضرور پڑھیں . چوتھی بیماری فالج کی بیماری ہےجن افراد کے ہاتھ پاؤں اچانک کام نہیں کرتے وہ بھی یہ تسبیح ضرورپڑھیں .آئیے اب ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ وہ تسبیح کون سی ہے(سبحان اللہ عظیم و بحمدہ ولا حول ولا قوۃ الا باللہ)یہ تسبیح ہر روز3مرتبہ نماز فجر کے بعد پڑھیں انہیں ان چار بیماریوں سے نجات مل جائیگیاس کو اپنے بیٹے کےلئے لڑکی دیکهتے ہوئے یہ تقریبآ ساتواں گهر تها،آج اس کے ساتھ یعنی بڑھیا کے ساتھ اس کی اپنی بیٹی بهی تهی،چائے میں بسکٹ ڈبوتے ہوئے بڑهیا نے اپنی بیٹی سے آہستہ سے پوچها، بیٹی نے جواب دیا اماں مجهے تو بہت پسند ہے۔بڑهیا بولی بیٹا پسند تو مجهے بهی بہت ہے مگر،مگر کیا اماں،بڑهیا نے ترچهی نگاہ سے پاس بیٹهی ماں بیٹی کو دیکها جن کے ہاں وہ رشتے دیکهنے آئ تهی اور طنزیہ لہجے میں بولی لڑکی تو مجهے بهی بہت پسند ہے۔ مگر ان کے حالت اور غریبی دیکهہ کے لگتا ہے کہ یہ تو ہماری بارات کو کهانا بهی نہیں دیے سکیں گے، اور ہم اپنے مہمانوں کے سامنے شرمندہ ہوں گے میں اپنے رشتہ داروں کو کیسے بتاوں گی کہ یہ ہمارے نئے رشتہ دار ہیں،اتنا کہہ کر بڑهیا اپنی بیٹی سےبولی اٹهو چلیں یہ ہمارے سٹیٹس کے نہیں ہیں،بڑهیا نے محض ایک بات کی تهی مگر اس ماں بیٹی کو تو باتوں سے ہی خنجر مار کر چهلنی کر دیا تها،وہ دونوں تو دل ہی دل میں اپنی بے بسی اور غریبی پر رو رہیں تهیں،بڑهیا صدیوں یاد رہنے والی باتیں بڑے دهیمے لہجے میں سنا کر چلی گئ

،وقت گزرتا گیا، نہیں تها، آج وہ والی بڑهیا کہ آواز نہیں تهی، آج وہ شہرت والا لہجہ نہیں تها، آج وہ غرور خاک میں مل گیا تها،پوچها بڑی بی،آج اداس لگ رہی ہیں، آپ کو بیٹے کےلئے بہو تو مل گئ نا اونچے خاندان کی جنہوں نے بارات کو اچها کهانا دیا ہو،؟؟اتنا کہنا تها تو اس کی زبان جیسے گنگ ہو کر رہ گئ، آج اس کی سسکیاں نکل رہیں تهیں،سسکیاں لیتے ہوئے بولی بیٹا،امیر فیملی کی بہو بهی مل گئ تهی، بارات کو کهانا بهی اچها دیا تها، رشتہ داروں میں میری عزت بهی بڑهی تهی، مگرآج میرا بیٹا بهی نہیں میرے پاس میرا پوتا بهی نہیں میرے پاس،بہو کہتی ہے تمہارے اس گاوں میں میرے بچوں کا دم گهٹتا ہے، ان کی پرورش اور تعلیم میں خلل آئے گا، اور میرے رشتہ دار آتے ہیں تو مجهے شرم آتی ہے ان کو اس گهر میں لاتے ہوئے،اور وہ میرے بیٹے کو لے کر بڑے شہر چلی گئ ہےاب تو میرا بیٹا فون بهی نہیں کرتا ترس جاتی ہوں کہ اپنے بیٹے کو دیکهوں اپنے پوتے کو دیکهوں مگر وہ تو سالوں بعد بهی نہیں آتے،جس کا کوئ نہیں ہوتا اس کا اللہ ہوتا ہے اور وہ بہترین انتقام لینے والا ہے اور وہ غریبوں کہ سنتا ضرور ہے، اس کے بعد بڑهیا رو رہی تهی اور میری کال بند ہو گئ،اپنے لہجوں سے کسی غریب و لاچار کو چهلنی مت کرو، آہ سے ڈرو اور یاد رکهو اللہ کی پکڑ بہت سخت ہے۔ پوسٹ پسند آئے تو آگے لازمی شیئر کریں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!