وزیراعظم کی روضہ رسول ﷺپر حاضری، ملکی سلامتی کیلئے دعائیں

کائنات نیوز! سعودی عرب کے دورے کے دوسرے مرحلے میں وزیر اعظم عمران خان نے روضہ رسول (صلی اللہ علیہ وسلم ) پر حاضری دی ۔تفصیلات کے مطابق وزیرِ اعظم عمران خان کے سعودی عرب دورہ کے دوسرے مرحلے میں وزیر اعظم عمران خان نے روضہ رسول (صلی اللہ علیہ وسلم ) پر حاضری دی ۔ وزیرِ اعظم عمران خان نے وفد سمیت مسجدِ نبوی (صلی اللہ علیہ وسلم) میں افطار کی اور نمازِ مغرب ادا کی۔

سعودی قیادت سے اہم ملاقاتوں کے بعد وزیرِ اعظم عمران خان روضہ رسول پر حاضری کیلئے مدینہ منورہپہنچے جہاں گورنر مدینہ منورہ نے استقبال کیا، وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیرِ داخلہ شیخ رشید احمد، گورنر سندھ عمران اسماعیل، گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان، سینیٹر فیصل جاوید خان اور صوبائی وزیر علیم خان بھی وزیرِ اعظم کے ہمراہ تھے۔اس موقع پر معاونِ خصوصی برائے سیاسی مواصلات ڈاکٹر شہباز گل اور وزیرِ اعظم کے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی مولانا طاہر اشرفی بھی موجودتھے۔وزیراعظم جب جہاز سے نیچے اترے تو انہوں نے احتراماً جوتے نہیں پہن رکھے تھے ۔قبل ازیں وزیراعظم عمران خان اور سعودی ولی عہد شہزاد ہ محمد بن سلمان کے درمیان ملاقات او ر معاہدوں کے متعلق مشترکہ اعلامیہ جاری کردیا گیا تھا۔ملاقات میں دوطرفہ سیاسی، معاشی، تجارتی، دفاعی اورسیکیورٹی تعلقات کو مزید ‏بڑھانے پراتفاق کیا گیا ہے۔

پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان رابطہ کونسل کے قیام سمیت پانچ اہم معاہدوں پر دستخط بھی کئے گئے۔اس کے علاوہ دونوں رہنماؤں کے درمیان دوطرفہ، علاقائی اورعالمی امور پر بھی بات چیت کی گئی، وزیراعظم نے سعودی عرب کی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت کے لیے ‏مستقل حمایت کی یقین دہانی کرائی۔انہوں نے سعودی ولی عہد کو دورہ پاکستان کی دعوت دی۔جو انہوں نےقبول کرلی۔اس موقع پرپاکستان اور سعودی عرب کے درمیان سپریم رابطہ کونسل کے قیام سمیت پانچ اہم معاہدوں پر دستخط کئے گئے ۔ دو معاہدے بالترتیب قیدیوں کے تبادلے اور جرائم کی بیخ کنی کے حوالے سے طے پائے، ایک معاہدے کی رو سے سعودی عرب پاکستان کو” سعودی ڈویلپمنٹ فنڈ سے 50کروڑڈالر کی رقم فراہم کرے گا۔مشترکہ اعلامیے کے مطابق پاکستان اور سعودی قیاد ت کے درمیان دوطرفہ سیاسی، معاشی، تجارتی،

دفاعی اورسیکیورٹی تعلقات کو مزید ‏بڑھانے پراتفاق کیا گیا جبکہ پاکستان میں سعودی سرمایہ کاری، توانائی کے شعبے میں تعاون ، قیدیوں کی منتقلی سے متعلق معاملات اورسعودی عرب میں ‏پاکستانیوں کے لیے ملازمت کے مواقع بڑھانے پر بھی زوردیا گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!