میں مسلمان تو نہیں ہوں لیکن پھر بھی کبھی مختصر لباس پہننے کو ترجیح نہیں دی اداکارہ سنیتا مارشل کے بیان نے پاکستانیوں کے دل جیت لئے

کائنات نیوز! معروف ماڈل اور اداکارہ سنیتا مارشل کا کہنا ہے کہ میں مسلمان نہیں ہوں پھر بھی میں نے کبھی مختصر لباس پہننے کو ترجیح نہیں دی بلکہ میری کوشش ہوتی ہے کہ پاکستان کی ثقافت کے مطابق لباس پہنوں۔ماڈل اور اداکارہ سنیتا مارشل کا شمار پاکستان شوبز انڈسٹری کی خوبصورت اور تہذیب یافتہ اداکاراؤں میں ہوتا ہے۔اداکارہ کرسچن مذہب سے تعلق رکھتی ہیں۔

اداکارہ سنیتا مارشل نے ایک مسلم اداکارحسن احمد سے شادی کی ۔ اور شادی کو 12 سال گزرنے کے بعد بھی ان کا شمار شوبز کی خوشگوار جوڑیوں میں کیا جاتا ہے۔ایک انٹر ویوکے دوران سنیتا مارشل نے پاکستان میں سوشل میڈیا پر فالوورز کی دوڑ اور پاکستانی کلچر کے بارے میں بات کی۔ سنیتا مارشل کا کہنا تھا کہ آج کل ہمارے یہاں ایک ریس لگی ہوئی ہے کہ کس اداکار کے انسٹاگرام پر فالوورز کتنے زیادہ ہیں اور اس ریس نے بہت سے لوگوں کومتاثر کر رکھا ہے۔ اس انڈسٹری میں آنے والے نئے اداکار سوشل میڈیا پر فالوورز کی تعداد بڑھانے کے چکر میں اکثر اپنی حدود سے تجاوز کر جاتے ہیں۔جب کہ اصل زندگی میں وہ ایسے بالکل نہیں ہوتے جیسا وہ سوشل میڈیا پر دکھاتے ہیں۔انٹرویو کے دوران سنیتا مارشل نے کہا ہم پاکستان میں رہتے ہیں جو ایک مسلم ملک ہے، اگرچہ میں مسلمان نہیں ہوں لیکن مجھے پاکستان کی ثقافت اور کلچر کے بارے میں معلوم ہے اس لیئے مجھے اس طرح کا لباس پہننا بالکل بھی

پسند نہیں جو پاکستانی کلچر کے مطابق نہ ہو۔ مجھے ایسا لباس پہننا بالکل پسند نہیں جس میں آپ کا جسم نظر آرہا ہو۔سنیتا مارشل نے شوبز انڈسٹری میں کاسٹنگ کاؤچ (کام کے بدلے نامناسب مطالبات) پر بات کرتے ہوئے کہا کہ میرے ساتھ اس قسم کا واقعہ کبھی پیش نہیں آیا کیونکہ میں شروع سے کسی سے زیادہ بات نہیں کرتی اور نہ ہی کوئی فضول حرکت کرتی ہوں اس لیئے میرے رویے سے سامنے والے کو اندازہ ہوجاتا تھا کہ یہ اپنے کام سے کام رکھنے والی لڑکی ہے شاید یہی وجہ ہے کہ میرے ساتھ کبھی اس طرح کا واقعہ پیش نہیں آیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!