یہ پھل آپ کو کبھی بوڑھا نہیں ہونے دے گا۔ اسٹرابیری کھانے

کائنات نیوز ! لال رنگ کا یہ خوبصورت پھل جسے ہم اسٹرابیری کہتے ہیں ناصرف آنکھوں کو اچھا لگتا ہے بلکہ اس کا ذائقہ زبان کو بھی انتہائی لذیذ لگتا ہے۔ چونکہ آج کل سردیاں اپنے اختتام کو ہیں اور بہار کی آمد ہے، اس موقع پر یہ پھل مارکیٹ میں آ چکا ہے۔.جس طرح ہر پھل کے صحت پر کچھ مخصوص فائدے ہوتے ہیں

اسی طرح اسٹرابیری بھی کئی وٹامنز اور نیوٹرینٹس کا خزانہ ہے ۔اسٹرابیری میں اینٹی آکسائیڈنٹس وافر مقدار میں پائے جاتے ہیں۔ ایسے افراد جن کی آنکھوں میں موتیے کا مرض ہو چکا ہو یا اندیشہ ہو کہ مستقبل میں ہو سکتا ہے، وہ افراد اس پھل کو ضرور کھائیں۔ انسانی آنکھوں کو وٹامن سی درکار ہوتا ہے تاکہ سورج کی الٹرا وائلٹ شعاعوں کے اثرات سے بچا جاسکے۔ وٹامن سی آنکھوں کے لیے بہترین ہے۔اینٹی آکسائیڈنٹس اور وٹامن کا خزانہ جوڑوں کے ورم کا اثر کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔ ہاروڈ اسکول آف پبلک ہیلتھ کی ایک تحقیق کے جو خواتین ہر ہفتے 16 یا اس سے زائد اسٹرابیریز کھاتی ہیں ان میں جوڑوں کے ورم کا خطرہ 14 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔

اس پھل میں موجود وٹامن سی کولیگن کی پروڈکشن کے لیے بھی اہمیت رکھتا ہے جو جلد کی لچک اور نرمی کو بہتر بنانے میں مدد دیتا ہے، جس وجہ سے آپ کے چہرے پر جھریاں پیدا نہیں ہوتیں۔ عمر بڑھنے کے ساتھ کولیگن کی سطح میں کمی آتی ہے تاہم وٹامن سی سے بھرپور غذا کے استعمال سے جلد کو صحت مند اور جوان بنانے میں مدد ملتی ہے۔ایسی خواتین جو حاملہ ہوں، انہیں باقاعدگی سے اسٹرابیری کھانی چاہئیں۔ حاملہ خواتین کے لیے عام طور پر بی وٹامن کی ایک قسم Folate کے استعمال کا مشورہ دیا جاتا ہے اور اسٹرابیریز اس کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے۔ Folate کو حمل کے ابتدائی مراحمل میں بچے کی کھوپڑی اور ریڑھ کی ہڈی کے لیے اہم مانا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ بھی یہ پھل ماں اور بچے دونوں کی صحت کے لیے فائدہ مند ہے

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!