لاہور ہائیکورٹ نے عدت پوری کیے بغیر شادی کرنے والی خواتین کے متعلق اہم فیصلہ سنا دیا،جانیں

ہائیکورٹ

کائنات نیوز ! لاہورہائیکورٹ نے قرار دیا ہے کہ خواتین کا عدت کے بغیر شادی کا اقدام زنا کے زمرے میں نہیں آتا، عدت گزارے بغیر شادی فاسد ہوسکتی ہے لیکن اسے باطل قرار نہیں دیا جا سکتا، لاہور ہائیکورٹ نے عدت مکمل کیے بغیر شادی کو زن۔ا قرار دینے کی درخواست خارج کر دی۔

جسٹس علی ضیا باجوہ نے امیر بخش کی درخواست پر 9 صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کیا، درخواستگزار نے سابقہ بیوی آمنہ کی عدت پوری کئے بغیر دوسری شادی پر زنا کے مقدمے کے لیے رجوع کیا تھا۔ درخواستگزار امیر بخش نے موقف اپنایا تھا کہ آمنہ نے عدالت سے تنسیخ نکاح کا فیصلہ لے کر اگلے روز اسماعیل سے شادی کر لی۔ عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ اگرموقف کو درست مان بھی لیا جائے تب بھی شادی باطل نہیں

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!