راشن چاہیے تو ریس لگاو اور گاڑی کو پکڑ کر دکھاو، غریبوں کے صبر کا امتحان

اسلام آباد(آن لائن نیوز )پاکستان میں کرونا وائرس کی وجہ سے ملک بھر میں لاک ڈائون سے غریب اور دیہاڑی دار طبقہ بری طرح سے متاثر ہے انہیں راشن لینے میں کافی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ حکومت اور مخیر حضرات کی جانب سےامداد کا سلسلہ جاری ہے ۔ تاہم اس حوالے سے ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہے، خوشاب میں کچھ امیر زادوں نے لاک ڈائون کے باعث غریبوں کیلئے راشن تقسیم کرنے کا اعلان کیا تو لوگ ان کے پاس جمع ہو گئے ،

امیر زادوں نے راشن پانے کیلئےافسوسناک شرط رکھ دی ۔ امیرزادوں نے غربت کا مذاق اڑانے کے لیے انوکھی شرط رکھ دی ، راشن اسی کو ملے گا جو میری تیز رفتار گاڑی کو موٹر سائیکل پر بیٹھ کر ہاتھ لگائے یا چھوئے گا۔ ویڈیو میں افسوسناک منظر دیکھا جا سکتا ہے کہ غریب کیسے موٹر سائیکل پر بیٹھ کر گاڑی کو چھونے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں۔ ان مناظر کو دیکھ کر امیرزادے خوب لطف اندوز ہو رہے تھے ۔ جبکہ دوسری جانب قانون نافذ کرنے والے بھی اس واقعے کے بعد خاموش دکھائی دے رہے ہیں ۔ خوشاب کے امیر زادوں نے غریبوں کی غربت کا کس طرح مذاق اُڑایا؟ ویڈیو آپ بھی دیکھیں :

دوسری جانب اس ملک میں کچھ ایسے بھی لوگ ہیں جو یہ جانتے ہیں کہ ملک م فاقوں کی جانب بڑھ رہا ہے، کرونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن ہے جس کی وجہ سے کئی دیہاڑی دار مزدوروں کے گھر فاقوں کی نوبت بھی ہے، مخیر حضرات کی کوشش ہے کہ کوئی شخص بھوکا نہ سوئے اس تک کھانے پینے کی اشیاء پہنچیں۔ مخیر حضرات ایک خاتون کے گھر پہنچے تو اعلیٰ ظرفی کی مثال قائم کرتے ہوئے مستحق خاتون نے راشن لینے سے انکار کر دیا،اس خاتون نے کہاکہ گھر میں پندرہ دن کا راشن موجود ہے۔ اس خاتون کی سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہے جس میں اس نے راشن لینے سے انکار کر دیا، اس خاتون نےکہا کہ میرے گھر میں پندرہ دن کا راشن موجود ہے جب ختم ہو جائے گا تو دیکھیں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!