بدلتا ہے آسماں رنگ کیسے کیسے، کورونا کے شکاروقار یونس قرنطینہ جانے کے بعد اس وقت کہاں اور کس حال میں ہیں؟

سڈنی (آن لائن نیوز) قومی کرکٹ ٹیم کے باﺅلنگ کوچ وقار یونس ’سیلف آئیسولیشن‘ سے باہر آ گئے ہیں جنہوں نے ایک مرتبہ پھر عوام سے گھروں میں رہنے اور احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کی درخواست کی ہے۔تفصیلات کے مطابق وقار یونس پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) ملتوی ہونے کے بعدآسٹریلیا چلے گئے تھے جہاں پہنچنے کے بعد انہوں نے خود کو 14 روز کیلئے آئیسولیٹ کر دیا تھا۔ آئیسولیشن سے باہر آنے کے بعد ایک بار پھر وقار یونس نے عوام سے درخواست کی ہے کہ گھروں میں رہیں اور احتیاطی تدابیر پر عمل کریں۔

واضح رہے کہ وقار یونس کی اہلیہ ڈاکٹر فریال سڈنی میں کورونا وائرس کے مریضوں کیلئے ایمرجنسی ڈیوٹی انجام دے رہی ہیں جس بارے میں انہوں نے سوشل میڈیا پر بھی آگاہ کیا تھا اور انہوں نے کورونا وائرس کیخلاف برسرپیکار ڈاکٹرز کو ہیرو قرار دیا تھا۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے خصوصی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا وائرس سے متعلق اعدادو شمار کسی صورت نہ چھپائے جائیں۔نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں کورونا وائرس کی موجودہ صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیاگیا کہ وبا سےمتعلق ڈیٹاکمانڈاینڈکنٹرول سینٹرجاری کرے گا

وزیراعظم عمران خان نےصوبوں کوڈیٹاکمانڈاینڈ کنٹرول سینٹرسےشیئرکرنےکی ہدایت کرتے ہوئے واضح ہدایت دی کہ کورونا وائرس سے متعلق اعدادوشمار کسی صورت نہ چھپائے جائیں۔ وبا سے متعلق کوئی بھی معلومات چھپانا قومی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہوگا۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ الحمد للہ پاکستان میں کورونا وائرس کی صورتحال پریشان کن نہیں، حکومتی اقدامات اور تمام اداروں کی محنت سے کنٹرول میں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ 14 اپریل تک اسی طرح کی پابندیاں جاری رکھی جائیں گی، اس کے بعد صورتحال کا جائزہ لے کر آئندہ کے فیصلے کریں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!