ایک مرد شادی کیوں کرتا ہے، سبق آموز تحریر‎

‎کائنات نیوز، ایک مرد شادی کیوں کرتا ہے، سبق آموز تحریر، ماں بیٹی سے: ایک بار تمہارے ابا مجھ سے کہنے لگے‘ ذرا سوچ کر بتاﺅ کہ مرد شادی کیوں کرتاہے؟ میں تو سچ مچ سوچ میں پڑ گئی‘ مہینے بعد حساب کرو تو بیوی کا خرچاچار باہر والی عورتوں سے زیادہ ہوتا ہے لیکن مرد پھر بھی شادی کرتا ہے‘ شادی پر لاکھوں کا خرچا اور ہمت سے زیادہ بیویوں کے ٹشن پورے کر کے دکھاتا ہے‘ اس کے لئے چھت ڈھونڈتا ہے‘ اس کے آرام کےلئے جتن کرتا ہے‘ دھوپ میں کڑھتا ہے‘ محنت کی بھٹی میں جلتا ہے‘ کبھی ضرورت پڑے تو اس کےلئے کبھی اپنا انا بیچ دیتاہے اور کبھی اپنی چمڑی بیچ دیتا ہے ‘پتا ہے کیوں؟ تم پوچھو نا کیوں؟ بیٹی:ڈرتے ڈرتے ماں سے پوچھتی ہے‘ کیوں؟

One of the key ways you will be able

It might seem easier to just hire a professional writer or writer to write your research

Those who can’t get their diploma from a

Try and

You want to begin your research paper writing as early as you can, even in

It’s usually prepared for a teacher or other class instructor, but may be completed

It is always useful to ask the man who will be composing the essay if they are also

However, only few people are able to

The ceremony will give him great tips so he can create his essay much more interesting and easy

This

The other sorts of subjects include public speaking agroclima.cenicafe.org and politics.

usually means that the service isn’t giving everyone imitation reviews to earn more cash.

to read.

write decent research documents.

carrying it, so the pupil can see the way the lessons learned from them will fit into the new assignment.

by a pupil of academic writing and research as well.

the event you must be up at sunrise to do some research.

keep your paragraphs as short as you can, and avoid using words that are complex.

college might be in a position to hire people with good credentials.

document for you.

to determine what subject that you need to write is by simply asking yourself the question, how do I know my subject? This can actually help you with this as you may determine your subject isn’t quite what you thought it was going to be you will need to locate another topic.

ماں: کیونکہ مرد کی یہ والی عادت خدا جیسی ہے‘ اب دیکھو نا خدا کو کیا ضرورت تھی کھربوں انسان پیدا کرتا؟ اور پھر ان کے کھانے پینے رہنے کی چیزیں مہیا کرتا؟ لیکن شاید ضرورت تھی اسے‘ وہ چاہتا تھا کہ کوئی مخلوق ایسی ہو جو پوجا کرے اس کی‘ جو سجدہ کرے اس کے نام پر‘ پھر جتنی کوئی پوجا کرے گا اس کی وہ اتنا ہی خیال رکھے گا اس کا۔ اور سب کچھ دے دینے کے بعد کہا کہ میں رحمن ہوں ‘ میں رحیم ہوں‘ سب گناہ معاف کروں گا لیکن شرک کبھی معاف نہیں کروں گا۔ بس خدا نے اپنی یہی عادت مرد کے خون میں ڈال دی ہے جس طرح اسے اپنی مخلوق سب سے پیاری ہے نا‘ اسی طرح ہر اچھے مرد کو اپنی بیوی بہت پیاری ہوتی ہے‘وہ خدا نہیں ہے لیکن خدا کی طرح اس کےلئے سب کچھ کرتا ہے‘ یا پھر کرنے کی کوشش کرتا ہے یہاں تک کہ اس کی غلطیوں پر رحمن اور رحیم بن جاتا ہے لیکن اس کا شرک کبھی معاف نہیں کرتا

یہ بھی پڑھیں! بڑی عمر کی لڑکی سے شادی کا نتیجہ، ایک حیران کر دینے والی داستاں

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!