بے روز گار افراد کیلئے دھماکہ خیز خوشخبری! لاک ڈاؤن کے دوران 75ہزار ملازمتیں دینے کا اعلان، مُرجھائے چہرے کِھل اُٹھے

واشگٹن (آن لائن نیوز) لاک ڈاؤن کے دوران ایمازون نے وئیر ہاؤس سے ڈلیوری ڈرائیورز تک کی ملازمتوں کے لئے مزید75ہزار افراد کی خدمات حاصل کرنے کا اعلان کیا ۔ کورونا کے باعث امریکی گھرو ں میں بندہیں اورآن لائن ڈلیوری کی مانگ میں اضافہ ہوا ہے ۔غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق خریداروں کو طویل مدتی قرنطینے اور مصنوعات کی قلت کے خوف کے ساتھ مختلف کمپنیاں خوراک اور مصنوعات کو اسٹاک میں رکھنے کے لئے کام کررہی ہیں اور اسٹور میں کام کرنے یا سامان کی ترسیل کے لئے انہیں ملازمین کی ضرورت ہوتی ہے ۔

ای کامرس کی سب سے بڑی کمپنی کو اس وقت زیادہ سے زیادہ افراد کو خدمات پہنچانے کے لئے مشکل کام کا سامنا کرنا پڑتا ہے یہاں تک کہ انہیں کالز بند کرنا پڑتی ہیں ۔ اگرچہ ایمازون میں گودام کے عملے میں وائرس کے کیس کی تصدیق ہوئی اور اسے کئی مظاہروں کا سامنا کرنا پڑا ہے ،کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ اپنے تمام امریکی اور یورپی گوداموں میں درجہ حرارت کی جانچ پڑتال کرے گی اور عملے کے لئے ماسک فراہم کرے گی۔کچھ منتخب حکام نے کمپنی سے گوداموں کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ لیکن بے روزگاری کی شرح ریکارڈ سطح پر آنے کے بعد ، ایمازون اس خلا کو پُر کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ نئے ملازمین کو راغب کرنے کے لئے کمپنی نے اعلان کیا تھا کہ وہ اپریل کے مہینے میں امریکی مزدوروں کی اجرت میں 15 گھنٹے کام کے ساتھ کم از کم 2ڈالر کا اضافہ کرے گی ۔

کمپنی نے پیر کو کہا کہ اس نے پہلے اعلان کردہ ایک لاکھ ملازمتوں کو بھردیا گیا ، اوراب اس کے علاوہ نئی ملازمتیں بھی شامل ہیں۔ایمازون کا کہنا ہے کہ وہ لاک ڈاؤن کے دوران مزدوروں کے لئے اجرت میں اضافہ کرنے کے لئے عالمی سطح پر500 ملین سے زیادہ خرچ کرنے کی توقع رکھتا ہے، جو گزشتہ تخمینے سے350ملین زیادہ ہے ۔کمپنی کا کہنا ہے کہ “ہم جانتے ہیں کہ کورونا کی وجہ سے مہمان نوازی ، ریستوران اور سیاحتی شعبے میں بہت سارے لوگوں کو معاشی طور پر متاثر کیا ہے اور ہم ہر بے روزگار فرد کو ایمازون میں شامل ہونے کا خیرمقدم کرتے ہیں ۔ جب تک کہ معاملات معمول پر نہیں آ جاتے ہیں اور وہ اپنی گزشتہ ملازمت پر واپس نہیں جاپاتے ۔

یہ بھی پڑھیں! نہ کوئی شرم نہ کوئی حیا! احساس کفالت پروگرام کی رقم دے کر خواتین سے کیا کام کرواتے رہے؟ شرمناک

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!