بےجا تنقید برداشت نہ ہوئی! مولانا طارق جمیل نے ایسا قدم اُٹھا لیا کہ ہر کوئی حیران رہ گیا،

اسلام آباد (آن لائن نیوز) مولانا طارق جمیل نے معروف صحافی جاوید چودھری نے سوال کیا کہ آپ نے میڈیا، اینکرز اور ایک میڈیا مالک کو جھوٹا کہا ہے، تو سارا میڈیا تو جھوٹا نہیں ہے، کیا میں بھی جھوٹا ہوں، جس پر مولانا طارق جمیل نے کہاکہ نہیں، ایسی بات نہیں ہے، مولانا طارق جمیل نے کہا کہ نبی اکرمؐ کے پاس ایک آدمی آیا اس نے کہا کہ دنیا بھر کی برائیاں مجھ میں ہیں ان میں سے کون سی برائی چھوڑ دوں،

جس پر نبی اکرمؐ نے کہا کہ آپ جھوٹ بولنا چھوڑ دیں، اس شخص نے جھوٹ بولناچھوڑا تو ایک ایک کرکے وہ تمام برائیوں سے بچ گیا۔ مولانا طارق جمیل نے کہا کہ میرے کہنے کا مقصد یہ نہیں تھا کہ سو میں سے سو ہی جھوٹے ہیں، اس موقع پر مولانا طارق جمیل نے کہا کہ اگر میرے اس بیان سے کسی کی دلآزاری ہوئی ہے تو میں معافی چاہتا ہوں۔ واضح رہے کہ مولانا طارق جمیل نے اپنی دعا میں کہا کہ عمران خان کو اُجڑا چمن ملا کہاں تک آبادکرے گا، بارش ہوئی آپ ﷺنے حضرت بلال ؓ سے کہا اذان میں کہو لوگ گھر میں نماز پڑھیں، وہ تو صرف کیچڑ تھا یہاں تو زندگی موت کا معاملہ ہے، اینکرز بیٹھے ہیں وزیر اعظم بیٹھے ہیں ہم کتنا جھوٹ بولتے ہیں،میں ہاتھ باندھ کر معافی چاہتا ہوں، ایک بڑے میڈیا مالک کو نصیحت کی جھوٹ نہ بولو اس نے کہا چینل بند ہو سکتا ہے جھوٹ بند نہیں ہو سکتا۔ ہم کرونا سے لڑ نہیں سکتے، یہ نہیں کہنا چاہیے، ہمیں دعا کرنی ہے، اللہ کی مدد مانگنی ہے۔صرف ہمارا میڈیا جھوٹا نہیں بلکہ پوری دنیا کا میڈیا جھوٹا ہے۔

یہ بھی پڑھیں! مولانا طارق جمیل نواز شریف کے دورِ حکومت میں کیا کرتے تھے؟ حامد میر نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!