معصوم سی شکل کا یہ پاکستانی بھیڑیا کون ہے ، جان کر پاکستانی غصے سے آگ بگولا ہو جائیں گے

حیدر آباد (آن لائن نیوز )معصوم سی شکل کا یہ پاکستانی بھیڑیا کون ہے ، جن کر پاکستانی غصے سے آگ بگولا ہو جائیں گے ۔۔۔ کمسن بچی کو ساتھ زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم کو سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے گرفتار کر لیا گیا۔تفصیلات کے مطابق آج حیدرآباد میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا جہاں 6 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرکے لاش پارک میں پھینک دی گئی۔

پولیس کے مطابق بنگالی کالونی سے لاپتہ ہونے والی بچی کی لاش قائد ملت پارک سے ملی جس کو زیادتی کے بعد قتل کیاگیا۔ پولیس نے بتایاکہ سی سی ٹی وی کی مدد سے زیادتی اور قتل کے الزام میں ایک ملزم کو گرفتار کرلیاگیا ۔ملزم نے پولیس کو دیے گئے بیان میں کہا کہ بچی کو کپڑے دلانے کے بہانے لے کر گیا تھا،زیادتی کرنے کے بعد قتل کیا اور لاش پارک میں پھینک دی۔پولیس کے مطابق پوسٹ مارٹم اور ابتدائی رپورٹ میں بچی سے زیادتی کی تصدیق ہوئی ہے۔ جب کہ ملزم نے بھی بچی کو قتل کرنے کا اعتراف کر لیا ہے۔ قبل ازیں بچی کے والد کا کہنا تھا کہ رخسار دوپہر میں یہ کہہ کر نکلی تھی کہ ایک انکل نے سامان دینے کے لیے بلوایا ہے۔ اس کے ساتھ چھوٹا بھائی بھی تھا جسے قاتل نے یہ کہہ کر گھر واپس بھجوا دیا کہ وہ بہن کو سامان دے دے گا۔ بچی کے لاپتہ ہونے کےبعد والد نے پولیس کو اطلاع دی جس کےبعد پولیس نے جائے وقوعہ تک جیو فینسنگ کا عمل شروع کر دیا ۔۔گرفتار ہونے کے بعد ملزم نے تفتیش کے دوران ملزم نے خود ہی لاش کے نشاندہی کی جس کے بعد بچی کے چچا کی مدیت میں جی او آر تھانے میں رخسار کو نئے کپڑے اور چپلیں دلانے کے بہانے اغواء کا مقدمہ پہلے ہی درج ہے، اغواء کی ایف آئی آر میں ملزم کے خلاف زیادتی اور قتل کی دفعات بھی شامل کی جائیں گی۔

دوسری جانب بہاولنگر کے نواحی علاقہ محلہ نظام پوری میں علاقہ کے بااثر اوباش نوجوان نے محنت کش اظہر کے 8 سالہ معصوم بچے کو اپنی ہوس کا نشانہ ڈالا۔ 8 معصوم زین علی کے والدین نے انصاف کے لئے کاروائی کروائی تو ملزمان نے اپنے اثرو رسوخ اور رشوت کا استعمال کرتے ہوئے میڈیکل جاری کرنے والے ڈاکٹر سے ملی بھگت کرکے ڈاکٹر نتیجہ غلط کروا دیا۔متاثرہ بچے کے والد نے میڈیا کو بتایا کہ ملزمان اب اس کو صلح کے لئے دباو دے رہے ہیں

یہ بھی پڑھیں! میں باپردہ اور پنج گانہ نمازی ہوں! مگر شادی کےلئے پریشان ہوں

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!