مجبور خاتون نے بچوں کو بہلانےکےلئے پتھر پکا ڈالے،حساس دل لوگوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا

ممباسا ( آن لائن نیوز)مشرقی افریقی ملک کینیا کی ایک مجبور ماں کی جانب سے بھوکے بچوں کو سلانے کے لیے پتھروں کو کھانے کے طور پر پکائے جانے کے واقعے نے حساس دل لوگوں کو جھنجھوڑ دیا۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق کینیا کے دوسرے بڑے شہر ممباسا کی ایک 8 بچوں کی بیوہ ماں پنینا بہتی کٹساؤ نے 30 اپریل کو بھوک سے نڈھال

اپنے 8 کم سن بچوں کو سلانے اور انہیں دھوکا دینے کی غرض سے ہانڈی میں پتھر ڈال کر اسے چولہے پر چڑھا دیا تاکہ ان کے بچے اس آسرے میں رہیں کہ ان کی ماں ان کے لیے کھانا تیار کر رہی ہیں اور وہ اسی انتظار میں سو جائیں،اپنی نوعیت کے اس پہلے واقعے کو سنتے ہی کئی حساس دل لوگ اشکار ہوگئے اور ایک پڑوسی کی مدد سے بچوں کے لیے پتھر پکانے والی ماں کو کینیا بھر سے لوگوں نے امداد بھجوادی۔رپورٹ کے مطابق مذکورہ خاتون کے شوہر گزشتہ سال دہشت گردوں کی جانب سے مارے گئے تھے، جس کے بعد خاتون گھروں میں کام کرکے گزر سفر کر رہی تھیں۔بیوہ خاتون گھر گھر جاکر کپڑے دھوتی تھیں اور اس سے ہونے والی کمائی سے اپنے گھر کے اخراجات چلاتی تھیں مگر کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن نافذ ہونے کی وجہ سے ان کا کام رک گیا اور ان کی مشکلات میں اضافہ ہوا۔

یہ بھی پڑھیں! جوانی دیوانی مستانی ! ہمارے معاشرے کی عجیب ساستان

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: Content is protected !!